تم لوگوں نے معافیاں مانگ مانگ کرنظام خراب کیاہوا ہے، جج احتساب عدالت چنیوٹ مائنز اینڈ منرلز ریفرنس میں ایس ایچ او پر برہم

لاہور.چنیوٹ مائنزاینڈ منرلز ریفرنس میں احتساب عدالت ایس ایچ اوتھانہ انڈسٹریل ایریااسلام آبادپر برہم ہو گئی، جج احتساب عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہاکہ تم لوگوں نے معافیاں مانگ مانگ کرنظام خراب کیاہوا ہے، سارادن معافیاں مانگ مانگ کرنظام چلاتے ہو،کوئی کام توذمہ داری سے کرلیاکرو۔

احتساب عدالت لاہور میں چنیوٹ مائنز اینڈ منرلز ریفرنس کی سماعت ہوئی،ایس ایچ اوتھانہ انڈسٹریل ایریااسلام آبادنے ملزم کی رپورٹ احتساب عدالت لاہور میں پیش کر دی،عدالت نے ایس ایچ اوانڈسٹریل ایریااسلام آبادپراظہاربرہمی کرتے ہوئے کہاکہ آپ نے عدالتی احکامات کوکیوں نہیں مانا؟ آپ نے عدالت کو مذاق سمجھ رکھا ہے۔

عدالت نے ایس ایچ او اسلام آباد سے استفسارکیاکہ آپکی کتنی سروس ہو گئی ہے؟ جج امجد نذیر چودھری نے کہاکہ تیس سال سے آپ یہیں کرتے ہوں ، جو ہم غفلت برتتے ہیں ایسے ہی سسٹم تباہ ہوا ہے۔جج احتساب عدالت نے کہاکہ تم لوگوں نے معافیاں مانگ مانگ کرنظام خراب کیاہواہے،سارادن معافیاں مانگ مانگ کرنظام چلاتے ہو،کوئی کام توذمہ داری سے کرلیاکرو،ایس ایچ او نے کہاکہ معذرت چاہتاہوں حکم کی تعمیل نہیں کرسکا، ایس ایچ او اسجد محمودنے عدالت کویقین دہانی کراتے ہوئے کہاکہ آئندہ ایسا نہیں ہو گا۔
عدالت نے استفسار کیاکہ جو اشتہار ہوتا ہے اس پر آپ کیسے عملدرآمد کرتے ہیں؟ عدالت نے اسلام آباد پولیس سے اشتہار چسپاں کرنے کی رپورٹ طلب کر لی،احتساب عدالت نے کہاکہ رپورٹ جو لکھی گئی ہے اس میں ٹیمپرنگ کی گئی ہے،جس نے یہ رپورٹ بنائی ہے اسکے خلاف کارروائی بنتی ہے۔

عدالت نے انڈسٹریل ایریا اسلام آباد کے ایس ایچ او کے ورانٹ گرفتاری منسوخ کرتے ہوئے سبطین خان کے شریک ملزم ارشد وحید کے خلاف اشتہاری کی کارروائی شروع کردی،عدالت نے دوبارہ اسلام آباد پولیس کو اشتہار آویزاں کرنے کا حکم دے دیا،احتساب عدالت لاہور نے 17 اپریل تک کارروائی ملتوی کردی

اپنا تبصرہ بھیجیں