جنوبی کوریا میں موجود امریکی فورسز نے قانون کی دھجیاں اڑا دیں

سیئول. جنوبی کوریا میں موجود امریکہ کی دفاعی فورسز (USFK) کے ایک حاضر سروس ممبر کے گھر میں پارٹی میں شرکت کے بعد آٹھ غیر ملکیوں اور ایک جنوبی کوریا کے باشندے میں کورونا وائرس کی تصدیق ہو گئی ہے.

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ پارٹی 13 فروری کو پیانگتیک شہر کی اوسان ائیر بیس کے قریب منائی گئی جو دارالخلافہ سیئول سے قریب 70 کلومیٹر جنوب میں واقع ہے اور اس میں 19 غیر ملکیوں اور دو جنوبی کوریا کے باشندوں نے شرکت کی تھی.حکومت کے عہدیداروں کے مطابق امریکہ کی دفاعی فورسز کا حاضر سروس ممبر ائیر بیس پر کام کرتا ہے.

عہدیداروں نے مذید بتایا کہ پولیس کو پارٹی کے دو شرکاء کا پتہ لگانے کے لئے کہا گیا ہے جن کا ابھی تک پتہ نہیں چل سکا کہ وہ کہاں گئے ہیں۔ پارٹی میں شریک 21 میں سے 9 کے ٹیسٹ مثبت جبکہ دیگر 10 شرکا کے ٹیسٹ منفی آئے ہیں جبکہ 2 کی تلاش جاری ہے. اس پارٹی کے شرکا نے انسٹاگرام پر ایک دوسرے سے رابطہ کرنے کے بعد ملاقات کی اور یہ کوریا کے مختلف علاقوں سے اکٹھے ہوئے تھے. حکومت پانچ یا زیادہ لوگوں کے نجی اجتماعات پر ملک گیر پابندی کی خلاف ورزی کرنے پر شرکا کو جرمانے کا ارادہ رکھتی ہے. بیماریوں کے کنٹرول اور روک تھام ایکٹ کے تحت پابندی کی خلاف ورزی کرنے والوں کو ایک لاکھ کورین وان (91 امریکی ڈالر) تک جرمانے کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں