ٹماٹر کی درآمد کیخلاف کاشتکاروں کا حکومت کیخلاف احتجاج، تیار فصل پر ہل چلا دیئے

حیدرآباد (ویب ڈیسک) حکومت کی جانب سے ٹماٹر کی درآمد کا سلسلہ بند نہ کیے جانے پر مقامی ٹماٹر کی قیمت کوڑیوں کے مول رہ جانے کے باعث آبادگاروں نے دلبرداشتہ ہو کر اپنی تیار فصل پر ہل چلا دیا۔

سندھ آبادگار بورڈ کے مطابق وفاقی حکومت کو ڈیڑھ ماہ قبل ہی موجودہ صورتحال سے خط لکھ کرآگاہ کر دیا تھا لیکن اس کے باوجود حکومت کی جانب سے درآمد کا سلسلہ بند نہ کیا گیا۔

درآمد بند نہ ہونے کی وجہ سے مقامی ٹماٹر کے ریٹ بہت کم ہو گئے ہیں اور آبادگاروں سے ٹماٹر اس وقت بھی 11 سے 15 روپے فی کلو خریدا جارہا ہے اور مزید کم ہو کر پانچ روپے تک پہنچ جانے کا امکان ہے جس کے سبب آبادگاروں کا فصل پر آنے والا خرچ تک پورا نہیں ہو سکے گا۔اسی صورتحال سے دلبرداشتہ ہوکر آبادگاروں نے احتجاجاً اپنی ٹماٹر کی تیار فصلوں پر ہل چلانے شروع کر دیے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں