جنوبی افریقہ کیخلاف سیریز کیلئے قومی کھلاڑیوں کی ٹریننگ جاری، 5 گھنٹے سے زائد سیشن کر کے نئی روایت قائم کر دی

کراچی . جنوبی افریقہ کیخلاف ٹیسٹ سیریز کیلئے پاکستان کرکٹ ٹیم نے نیشنل سٹیڈیم کراچی میں پریکٹس شروع کر دی ہے اور کھلاڑیوں نے ٹریننگ سیشن کے پہلے روز پانچ گھنٹے سے زائد وقت گراؤنڈ پر گزار کر نئی روایت بھی قائم کردی۔

تفصیلات کے مطابق پاکستانی کرکٹرز نے کوویڈ 19 ٹیسٹ کلیئر کرنے کے بعد ساڑھے بارہ بجے نیشنل سٹیڈیم کا رخ کیا، سیشن کا آغاز روایتی ڈرلز کے ساتھ ہوا جس کے بعد 20 رکنی سکواڈ نے مختلف گروپس میں ٹریننگ کا آغاز کیا۔ قومی کھلاڑیوں کی رہنمائی کیلئے کوچز مصباح الحق، وقار یونس اور یونس خان کے ساتھ محمد یوسف اور ثقلین مشتاق بھی نیشنل سٹیڈیم میں موجود تھے جنہوں نے پلیئرز کو جنوبی افریقی ٹیم سے نبرد آزما ہونے کیلئے مختلف نسخے بتائے۔

محمد یوسف اور یونس خان بیٹسمینوں کے ساتھ وقت گزارتے دکھائی دئیے تو ثقلین مشتاق نے سپنرز کو جادو سکھانے کی کوشش کی۔ گراؤنڈ پر تین نیٹس لگائے گئے تھے، دو نیٹس بیٹنگ پریکٹس کیلئے مختص تھے جبکہ گراؤنڈ کے وسط کی وکٹ پر ’سینیریو بیسڈ ‘ ٹریننگ کی گئی جس دوران میچ کی ممکنہ جوڑیوں کو ذہن میں رکھ کر کھلاڑیوں کو بیٹنگ کیلئے بھیجا جاتا جو بیٹنگ پریکٹس کے دوران سلپ فیلڈرز اور وکٹ کیپرز کے حصار میں بھی رہے تاکہ بھرپور پریکٹس ہوسکے۔

پاکستانی کرکٹرز نے شام ساڑھے پانچ بجے تک یہ پریکٹس سیشن جاری رکھا اور کرکٹرز ایک بار پھر کل صبح نیشنل سٹیڈیم میں ٹریننگ کیلئے جمع ہوں گے۔ چیف سلیکٹر محمد وسیم بھی کراچی پہنچ چکے ہیں جو ٹیم مینجمنٹ کی مشاورت سے 20 رکنی سکواڈ کو کم کرکے 16 رکنی سکواڈ میں تبدیل کریں گے جو پہلے ٹیسٹ کیلئے فائنل الیون میں جگہ پانے کیلئے دستیاب ہوگا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں