سپریم کورٹ نے کیس دوبارہ ہائیکورٹ کو دیدیا،نیب کے کیسز میں تاخیرکے ایشو کو ہائیکورٹ میں اٹھائیں گے،عطاتارڑ

اسلام آباد.مسلم لیگ ن کے رہنماعطاتارڑ نے کہاہے کہ حمزہ شہباز کا کیس سپریم کورٹ میں ضمانت کیلئے زیرسماعت تھا،سپریم کورٹ نے یہ کیس دوبارہ ہائیکورٹ کو دیدیاہے،حمزہ شہبازکو قید میں 19 ماہ ہو گئے ہیں،نیب کے کیسز میں تاخیرکے ایشو کو ہائیکورٹ میں اٹھائیں گے۔

مسلم لیگ ن کے رہنما عطا تارڑ کاکہناہے کہ نیب کیسز میں طویل قید میں رکھے پرقانونی نکات پر بحث کی جائے گی ،ٹرائل کورٹ کی طرف سے رپورٹ بھجوائی گئی تھی ،رپورٹ میں لکھا تھا ٹرائل ہونے میں مزید 10 سے 12ماہ لگ سکتے ہیں ،ابتک 110 میں سے 5 گواہوں پر جرح کی گئی ہے ۔عطاتارڑ نے کہاکہ کسی بھی شخص کو غیرمعینہ مدت کیلئے قید میں رکھنا انسانیت کی خلاف ورزی ہے،بہت عرصے سے شہزاداکبر آکر کاغذات نہیں لہرا رہے ۔

انہوں نے کہاکہ براڈ شیٹ کا جب معاہدہ ہوا تو شیخ عظمت نیب پراسیکیوٹر تھے، براڈ شیٹ معاملے سے متعلق مسلم لیگ ن کی پالیسی واضح ہے، شیخ عظمت کا براڈ شیٹ کیس کی تحقیقات کرنے کا حق نہیں بنتا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں